اردوئے معلیٰ

جب سے لب پر درود و سلام آپ کا

شاد رہنے لگا ہے غلام آپ کا

 

سر کے بل آؤں گا آپ کے شہر میں

اِذن ملتے ہی خیرالانام آپ کا

 

نور پُرنور ہے گھر مرا نور ہے

جب سے دروازے پر لکّھا نام آپ کا

 

’’وَرَفَعْنَا‘‘ کی آیت کا بھی ہے بیاں

ذکر اونچا ہے سب سے مقام آپ کا

 

باعثِ رُشد ہے زندگی آپ کی

حرف در حرف حق ہے کلام آپ کا

 

آپ کی پیروی طاعتِ کبریا

شرطِ ایمان و دیں احترام آپ کا

 

نعتِ میرِ ازل کا یہ بے شک رضاؔ

جانِ محفل رہے گا کلام آپ کا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات