اردوئے معلیٰ

Search

جس جس کے لب پہ نعتِ رسولِ عَرَبی ہے

واللہ وہی شخص مقدّر کا دَھنی ہے

 

بزمِ جہانِ سیّدِ کون و مکان میں

ہر شخص ستارہ بدنی ، گل چَمَنی ہے

 

خود دے کے بھیک کہتا ہو منگتے کی خیر ہو

ڈھونڈو جہاں میں اُن سا کہیں کوئی سخی ہے

 

روکو نہ فرشتو اسے جانے دو عدن میں

نسبت سے یہ بھی پنجتنی ، پنجتنی ہے

 

سرکارِ دوعالم کی نگاہوں کا کرم ہے

بگڑی ہوئی ہر بات نصیبوں کی بنی ہے

 

آقا جی! بلا لیجئے دربار پہ اپنے

اِن ہجر کے لمحوں سے مری جاں پہ بنی ہے

 

سب حال سے واقف ہو میرے اے میرے آقا

کب آپ سے یہ میری کوئی بات چھپی ہے

 

ایمانِ مکمل ہے محمد کی محبت

خامی ہو رضاؔ اس میں تو ایماں میں کمی ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ