اردوئے معلیٰ

Search

جس کو آیا قرینہ مدحت کا

چمکا مہتاب اس کی قسمت کا

 

دل کا احوال ہو بیاں ان سے

مرحلہ آئے جب زیارت کا

 

لب پہ میرے رہے ثنا ان کی

سلسلہ یوں چلے عقیدت کا

 

روزِ محشر وہ ساتھ رکھیں اگر

لطف آجائے پھر رفاقت کا

 

اک زیارت ہو خواب میں زاہدؔ

امتحاں ہے مری سعادت کا

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ