اردوئے معلیٰ

Search

 

جمالِ شاہِ امم لاکھ بار بسم اللہ

نثار آپ پہ جانِ بہار بسم اللہ

 

درود پڑھتی رہیں دم بہ دم کھلی آنکھیں

ہزار بار کہے خواب زار بسم اللہ

 

دکھائی دے گا نگاہوں کو جب رُخِ اقدس

لبوں سے نکلے گا بے اختیار بسم اللہ

 

عطا ہو میری اداسی کو فیضیابی حضور

کہ پڑھ رہا ہے مرا انتطار بسم اللہ

 

گلی مدینے کی ہو اور برہنہ پائی ہو

کروں میں شکر چبھے کوئی خار ، بسم اللہ

 

فلک چراغ جلائے ہو جب شبِ معراج

دُرُود بھیجوں پڑھوں بے شمار ، بسم اللہ

 

خرامِ ناز کرے بے قرارِیوں کو نوید

ہر اک قدم پہ کہیں بے قرار ، بسم اللہ

 

مِرے حضور کی آمد ہے اِس مہینے میں

لبوں پہ رکھتی ہے بادِ بہار بسم اللہ

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ