اردوئے معلیٰ

Search

جھوم کر کیوں نہ چومے جبیں دائرے

نقشِ پا آپ کے ہیں حسیں دائرے

 

مدح خیرالورا ہے جہاں دیکھیے

کیا احاطہ کریں گے کہیں دائرے

 

گنگناتا رہا نعتِ سلطانِ دیں

مجھ کو گھیرے رہے نغمگیں دائرے

 

مع نعلین عرشِ عُلیٰ پر گئے

عرش تک ہیں وہ نورِ مبیں دائرے

میرے آقا نے رکھے جہاں بھی قدم

نور کے بن گئے ہیں وہیں دائرے

 

نقشِ پا آپ کے دائرے بے مثال

درحقیقت ہیں یہ دل نشیں دائرے

 

میں حصارِ ثنائے محمد میں ہوں

خاکیؔ! چاروں طرف ہیں نگیں دائرے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ