اردوئے معلیٰ

Search

 

حسن قدرت میں جہاں مجھ سے سجانے والا

مجھ کو مٹی سے تُوانسان بنانے والا

 

تیری رحمت کے برسنے کا نہیں ہے موسم

تو ہے مخلوق پہ رحمت ہی لٹانے والا

 

سامنے عرش پہ محبوب کے سِرکا کے نقاب

اپنے جلوے کو تُو جلوہ ہے دکھانے والا

 

اپنی فردوس کے پہلو میں محمد کے لیے

رشک جنت تو مدینے کو سجانے والا

 

مشت اِک خاک ہوں، لیکن تری قدرت سے خدا

گل ہوں، خوش بو ہوں میں دنیا کو سجانے والا

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ