اردوئے معلیٰ

Search

خامشی ، غارِ حرا ، دِل میرا

تیرے قدموں کی صدا دِل میرا

 

گنبدِ سبز پہ تاروں کا ہجوم

اور سرِ بابِ دُعا دِل میرا

 

صبح کے ساتھ جھکی شاخِ گلاب

شاخ کے ساتھ جھکا دِل میرا

 

لوح در لوح ترے نقشِ قدم

حرف در حرف لکھا دِل میرا

 

ڈوبتی رات کے سنّاٹے میں

اِک کتاب ،ایک دیا دِل میرا

 

روشنی طاقِ ابد سے اُتری

اور ستارے نے کہا ،دِل میرا

 

جن زمانوں میں تری خوشبو تھی

اُن زمانوں کی ہوا ،دِل میرا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ