اردوئے معلیٰ

خدا سے وصل ہو دل چاہتا ہے

خدا سے وصل ہو دل چاہتا ہے

مجھے درپیش مشکل مرحلہ ہے

خدا دِل میں ترے جلوہ نما ہے

ظفرؔ تو کس خدا کو ڈھونڈتا ہے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ