اردوئے معلیٰ

خدا فرمایا محبوبا، زمانے سارے تیرے نیں

عرش والے، فرش والے، دیوانے سارے تیرے نیں

 

میں خالق ساری دنیا دا، توں مالک ساری دنیا دا

کسی منگتے نوں نا موڑیں، خزانے سارے تیرے نیں

 

میں شاہرگ توں وی اقرب ہاں، تو جاناں تو وی ہیں نیڑے

جو دل نیں سینیآں اندر، ٹھکانے سارے تیرے نیں

 

نماز ہوے اذان ہوے، درود ہوے سلام ہوے

جو گونجن ہر طرف سوہنا، ترانے سارے تیرے نیں

 

امیراں نال ہر کوئی، ہے کردا دوستی ناصر

غریباں نال محبوبا، یارانے سارے تیرے نیں

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات