خدا کی ذات کا فضل و کرم ہے

خدا کی ذات کا فضل و کرم ہے

کہ رُخ میرا سدا سوئے حرم ہے

ظفرؔ خانۂ کعبہ محتشم ہے

خمیدہ سر یہاں عرب و عجم ہے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

کرم کا مرحلہ پیشِ نظر ہے
خدا نے سب جہاں پیدا کئے محبوبؐ کی خاطر
خدا کے ذکر پر مامور ہوں میں
حمد ہے آفتاب کا منظر
اور کہاں کو جائیں یا رب
قطرہ قطرہ ہمیں ترسائے نہ کم کم برسے
حسینؑ گلشن مذہب کا ایک گل ہے نفیس
گھر کے باہر بھی ہر اک شخص کسی دکھ میں ہے
مقامِ مصطفیٰؐ، اللہ ہی اللہ
محبت کا وہ بحرِ بیکراں ہیں