اردوئے معلیٰ

 

خدا کے نور نے جب گودِ آمنہ دیکھا

جہانِ حسن نے محبوب کبریا دیکھا

 

بڑی ہے مست مدینے سے آئی کعبہ تو

بتا مجھے بھی تو، کیا تو نے اے ہوا دیکھا

 

دلوں سے گرد ہٹی اور ہوئے منور وہ

نبی کو سامنے جس نے بھی تھا سنا دیکھا

 

امام آپ تھے سارے نبی امامت میں

خدا نے سامنے سجدہ رسول کا دیکھا

 

نبی تھے سارے جہانوں کے رونقِ محفل

خدا نے عرش پہ میلاد مصطفیٰ دیکھا

 

گلوں کے ساتھ میں بادِ صبا بھی تھی رقصاں

وجود پاک جو دنیا نے آپ کا دیکھا

 

عظیم جشن پہ میلاد مصطفیٰ ہے گلؔ

جہاں پہ کیا ترا احسان اے خدا دیکھا

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات