اردوئے معلیٰ

خود کو ہر حکم کا پابند سمجھ لیتے ہیں

لوگ ، لوگوں کو خداوند سمجھ لیتے ہیں

 

وہ پرستار ترے آگے نگوں رہتے ہیں

جو ترا دست- ہنرمند سمجھ لیتے ہیں

 

ٹوٹنے دیتے نہیں تیرا بھرم لوگوں میں

ہم ترے جھوٹ کو ہرچند سمجھ لیتے ہیں

 

بانٹ لیتے ہیں بہت شوق سے ذمے داری

فرض جب باپ کا فرزند سمجھ لیتے ہیں

 

روک لیتے ہیں چلو ہاتھ پہ آئی دستک

ہم یہ دروازہ چلو بند سمجھ لیتے ہیں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات