اردوئے معلیٰ

Search

خوشنودیٔ رسول ہے الفت حسین کی

ایذا ہے مصطفٰے کو ، اذیت حسین کی

 

نانا نبی ہے بابا علی ماں بتول ہے

بے مثل ہے جہاں میں نجابت حسین کی

 

کیسے نہ ان کے ناز اٹھائیں ملائکہ

دوشِ نبی پہ کھیلنا عادت حسین کی

 

سردارِ خلد ہے یہ نواسہ رسول کا

وہ جنتی ہے جس کو اجازت حسین کی

 

سر دے دیا ، یزید کی طاعت نہ کی قبول

چشمِ فلک نے دیکھ لی جرأت حسین کی

 

اس نے کئی ہزار کو نابود کر دیا

سب مانتے ہیں آج بھی طاقت حسین کی

 

ہر دور کے یزید کی تا دیب کے لئے

ہر دور میں رہے گی ضرورت حسین کی

 

ہو گا یزیدیت کا سدِ باب یوں جلیل

کرنی پڑے گی دوستو طاعت حسین کی

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ