خُلق اور خَلق میں بس آپ ہیں عالی مقام

خُلق اور خَلق میں بس آپ ہیں عالی مقام

جملہ مخلوقات میں ہیں آپ سب سے محتشم

 

نعت گوئی کا ادا حق ہو یہ ممکن ہے کہاں

فضل ربی کی بدولت لکھ رہے ہیں نعت ہم

 

آفتاب نور ہیں فضل و کرم میں طور ہیں

اے نبیِ محترم ہیں آپ دریائے کرم

 

یا نبی دیدار کی لذت ہمیں بھی ہو نصیب

رحمۃ للعالمیں ہم پہ بھی ہو چشم کرم

 

خاتمہ بالخیر ہو رب سے دعا کرتا ہوں میں

نعت گوئی کے توسط سے ہے امّید کرم

 

فضل و جاہِ شاہِ بطحا کی ہے حد خوشدلؔ کہاں

تجھ سے کیا ممکن ہے توصیف شہ خیرالامم

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ