اردوئے معلیٰ

Search

خیریت مرہون ہوکر رہ گئی ہے فون کی

آج کل کوئی کشش ہوتی نہیں ہے خون کی

 

اس کی اپنی منطقیں ہیں اس کے اپنے فلسفے

بھاڑ میں جھونکی ہیں اس نے ڈگریاں قانون کی

 

اب جماعت میں مجھے آنا ہے اول کرب کی

سب شقیں رٹ لی ہیں میں نے ہجر کے مضمون کی

 

عمر بھر یہ بد گمانی کی گرہیں کھلنی نہیں

یونہی سلجھاتے رہیں گے گتھیاں ہم اون کی

 

اس لئے رہتا ہے دونوں کی طبیعت میں تضاد

میں نومبر کی ہوں پیدائش وہ لڑکا جون کی

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ