اردوئے معلیٰ

رسول رحمت

رسول رحمت
نبی امی
جو خارزار حیات میں پیار کے مہکتے گلاب لایا
جو زندگی کے جھلستے صحرا میں رحمتوں کے سحاب لایا
حرا سے اترا تو درس اقراء کا باب لایا
جو سورہ والضحیٰ کی روشن دلیل لایا
نوید رب جلیل لایا
خدائے قدوس نے عطا کر کے جس کو کوثر
بنا دیا ابن وائل اور بولہب کو ابتر
وہ سید کاروان بطحا
وہ زینت سرزمین طیبہ
وہ عظمت آسمان بطحا
خدا کا پیغام لے کے صحن حرم میں آیا
اکابر شہر کو پکارا
اکابر شہر مکہ صحن حرم میں آئے
تو آپ نے رب وحدہٗ لاشریک کے اسم پاک سے
والضحیٰ کی آیات کی تلاوت کی ابتدا کی
یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ