اردوئے معلیٰ

روح کی بالیدگی اور دل کی فرحت کے لئے

نعت لکھتا ہے یہ احقر اس ضرورت کے لئے

 

تا قیامت ساری دنیا کی ہدایت کے لئے

آئے سرکارِ دو عالم اس ضرورت کے لئے

 

چاہئے تھا اک نبی ختمِ نبوت کے لئے

چن کے بھیجا رب نے ان کو اس ضرورت کے لئے

 

اک نبی آنا تھا نبیوں کی امامت کے لئے

بعثتِ محبوبِ رب ہے اس ضرورت کے لئے

 

مظہرِ کامل ہو جو گل کاری فطرت کا نقش

کر دیا پیدا محمد اس ضرورت کے لئے

 

وحی متلو ربِ دو عالم کو کرنی تھی تمام

ان پہ کی تنزیلِ قرآں اس ضرورت کے لئے

 

تا کریں تبیینِ قرآں باللسان و بالعمل

سیدِ کونین آئے اس ضرورت کے لئے

 

آخرش کرنی جو تھی اللہ کو تکمیلِ دیں

بعثتِ شاہِ ہدیٰ ہے اس ضرورت کے لئے

 

رب کو دکھلانی تھی کیا ہے حدِ معراجِ بشر

آپ کو معراج بخشی اس ضرورت کے لئے

 

جرعہ کش ہو کر کے جس سے رہ نہ جائے تشنگی

ہے خمستانِ محمد اس ضرورت کے لئے

 

کیا ضرورت تھی کسی کو آستانِ غیر کی

شاہِ بطحا جب ہے کافی ہر ضرورت کے لئے

 

فی الحقیقت کیا ہے اسلامی حکومت اے نظرؔ

کر کے دکھلا دی حکومت اس ضرورت کے لئے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات