رہائش

بستیاں بستیوں میں رہتی ہیں

پستیاں پستیوں میں رہتی ہیں

حسرتیں حسرتوں میں رہتی ہیں

ہستیاں ہستیوں میں رہتی ہیں

کون ڈوبا ہے کب کسے پرواہ

مستیاں مستیوں میں رہتی ہیں

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ