سارے شہروں میں ہوا افضل مدینہ آپؐ کا

 

سارے شہروں میں ہوا افضل مدینہ آپؐ کا

سب مہینوں میں ہوا افضل مہینہ آپؐ کا

 

بھیک میں گلزار کو ملتی ہے خوشبو آپؐ سے

مشک و عنبر سے معطر ہے پسینہ آپؐ کا

 

دُونوں ہاتھوں سے لٹاتے ہو جواہر جُود کے

کم ذرا سا بھی نہیں ہوتا خزینہ آپؐ کا

 

کائناتِ حسن بھی، ہو حسنِ کائنات بھی

دل کے جھومر میں سجایا ہے نگینہ آپؐ کا

 

پار اترے گا یقینا ہر بڑے طوفان سے

بحرِ غم میں جس کو مل جائے سفینہ آپؐ کا

 

سارے نبیوںؑ کے، رسولوںؑ کے قرینے خوب ہیں

اعلیٰ ، ارفع ، اور کامل ہے قرینہ آپؐ کا

 

بھر دیے کونین کے سب راز قلبِ پاک میں

’’رَب الشرح لی‘‘ کردیا خالق نے سینہ آپؐ کا

 

آپؐ کا نقشِ کفِ پا ہے صراطِ مستقیم

جنت الفردوس کو جاتا ہے زینہ آپؐ کا

 

میں نے تو اشفاقؔ سیکھا ہے یہی اسلاف سے

بوجہلؔ ہے دل میں جو رکھتا ہے کینہ آپؐ کا

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

کائناتِ نعت ،محدودات میں آتی نہیں
منور صبح ہوگی روضۂ خیرالوریٰ ہوگا
نبی کا نام جب میرے لبوں پر رقص کرتا ہے
جب حسن تھا ان کا جلوہ نما انوار کا عالم کیا ہوگا
کس کی آمد ہے یہ کیسی چمن آرائی ہے
کلامِ احمدِ مرسل سمندر ہے لطافت کا
اے خدا شكر كہ اُن پر ہوئیں قرباں آنكھیں
ہستی پر میری مولا آقا کا رنگ چڑھا دے
روحِ دیں ہے عید میلادُالنبی
شب غم میں سحر بیدار کر دیں

اشتہارات