اردوئے معلیٰ

Search

سخن کی بھیک ملے یہ سوال ہے میرا

نبی کی نعت کہوں یہ خیال ہے میرا

 

انہی کے اذن سے چلتا ہے خامۂ عاجز

انہی کی نعت ہی واحد کمال ہے میرا

 

نبی کی یاد سے رہتا ہے میرا دل شاداں

نہ کوئی رنج نہ کوئی ملال ہے میرا

 

ہوئی ہے ذکرِ نبی سے جو روح تازہ مری

انہی کے فیض سے جیون نہال ہے میرا

 

وفورِ شوق سے شام و سحر درود پڑھوں

یہ شوق روزِ ازل سے بحال ہے میرا

 

غلامیٔ شہِ بطحا پہ ناز ہے مجھ کو

کہ ناز عشق میں مرشد بلال ہے میرا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ