اردوئے معلیٰ

Search

سرورِ عالم شہِ ذی شاں نظر بر حالِ من

مُشکلیں کیجے مری آساں نظر بر حالِ من

 

نخلِ ایماں کو مرے آقا عطا ہو تازگی

اِس پہ برسے لُطف کا نِیساں نظر بر حالِ من

 

اے مرے سرکار میری التجا مقبول ہو

دیکھ لوں میں بھی رُخِ تاباں نظر بر حالِ من

 

فُرقتِ طیبہ سے آقا دل میرا غمگین ہے

درد کا ہو اب مرے درماں نظر بر حالِ من

 

نفس و شیطاں کی ہلاکت خیزیاں بڑھنے لگیں

مجھ پہ غالب ہو گئے عصیاں نظر بر حالِ من

 

پھر مدینے میں عطا ہو باریابی کا شرف

پھر یہ پورا ہو مرا ارماں نظر بر حالِ من

 

واسِطہ حسنین کا جو پھول ہیں سرکار کے

کیجئے گا مِثلِ گُل خنداں نظر بر حالِ من

 

اشکباری اور غمِ اُمت کا آقا واسطہ

حشر میں فرمائیے شاداں نظر بر حالِ من

 

اپنی نظروں میں سدا مرزا کو رکھیے گا حضور

آپ ہی کا ہے یہ مدح خواں نظر بر حالِ من

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ