سرورِ قلب و جاں ہے، ربِ ہست و بُود تُو ہی تُو

سرورِ قلب و جاں ہے، ربِ ہست و بُود تُو ہی تُو

ہر اِک ذرے میں، ہر قطرے میں بھی موجود تُو ہی تُو

ملائک اِنس و جاں عابد ہیں، بس معبود تُو ہی تُو

زمانے سجدہ گاہیں، اے خدا مسجُود تُو ہی تُو

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

میں تیرا فقیر ملنگ خدا
تو اعلیٰ ہے ارفع ہے کیا خوب ہے​
اے میرے مولا، اے میرے آقا، بس اپنے رستے پہ ڈا ل دے توُ
جانوں ترا جلال سنہرے ترے اصول
خداوندا! مرا دل شاد کر دے
خدا اعلیٰ و ارفع، برگزیدہ
خدا مجھ کو شعورِ زندگی دے
میں بے نام و نشاں سا اور تو عظمت نشاں مولا
خدا ہی بے گماں خالق ہے سب کا
خدا آفاق کی روحِ رواں ہے

اشتہارات