اردوئے معلیٰ

Search

سوتا ہوں اس امید پہ ہر بار یا نبی

بن جائے کوئی صورتِ دیدار یا نبی

 

اُمّت کو مشکلات سے آقا نکال دیں

سارے عدو ہیں در پئے آزار یا نبی

 

فرقوں میں منقسم تری اُمّت کو سر بسر

گھیرے ہوئے ہے فتنۂ تاتار یا نبی

 

ہوگا لحد میں آپ کا دیدار جس گھڑی

کام آئیں گے یہ نعت کے اشعار یا نبی

 

اقصٰی میں انبیاء ہیں کھڑے منتظر حضور

سب انبیاء کے آپ ہیں سردار یا نبی

 

منصب شفیعِ حشر کا ملنا ہے آپ کو

ہوں گے ضرور آپ ہی مختار یا نبی

 

ناموسِ مصطفٰی پہ جو گردن نہ کٹ سکے

عاصی کی زندگی ہے یہ بیکار یا نبی

 

پیشِ نظر جلیل ہے گر سیرتِ رسول

ہو گا ضرور صاحبِ کردار یا نبی

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ