شکریہ پھر بھی اے مرے خالق

شکریہ پھر بھی اے مرے خالق

اتنی ناکام زندگی کے لئے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

ایسے نحیف شخص کی طاقت سے خوف کھا
چار شعروں کی مار ہے وہ شخص
گماں یہی ہے کہ ہم لوگ زندہ رہ جائیں
اٹھایا اس نے بیڑا قتل کا کچھ دل میں ٹھانا
مسلسل حادثوں سے بس مجھے اتنی شکایت ہے
تیری دستار پہ تنقید کی ہمت تو نہیں
زندگی دیکھ تری خاص رعایت ہو گی
میں نے چپ ایسے سادھ لینی ہے
یوں خزاں رت میں نہ جھڑتی ، ابھی زندہ ہوتی
بن گئی اتنی جگہ شہر ادب میں کومل

اشتہارات