اردوئے معلیٰ

عقیدت کے محور، حسین ابنِ حیدر

عقیدت کے محور، حسین ابنِ حیدر

شہیدوں کے رہبر، حسین ابنِ حیدر

 

کریں دینِ حق کے لیے کربلا میں

فِدا تَن بَہتَّر ، حسین ابنِ حیدر

 

سواری کریں دوش پر مصطفی کے

ہیں زہرا کے دلبر، حسین ابنِ حیدر

 

یہ کہتے ہوئے آگئے حضرتِ حُر

بنا دو مقدر، حسین ابنِ حیدر

 

قیامت میں بھی آپ کا قربِ اقدس

مجھے ہو میسر، حسین ابنِ حیدر

 

نہ کیونکر عطا ہو مجھے باغِ جنت

سفارش کریں گر، حسین ابنِ حیدر

 

وظیفہ ہے میرا ہر اک غم میں آصفؔ

حسین ابنِ حیدر، حسین ابنِ حیدر

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ