اردوئے معلیٰ

Search

غم سے نجات دفعِ بلیات چاہیے

ذکرِ حبیبِ کبریا دن رات چاہیے

 

دہلیزِ مصطفےٰ پہ سخن سجدہ ریز ہے

فکر و خیال کی اسے سوغات چاہیے

 

دنیا سے کچھ غرض نہ زر و مال کی ہوس

عشقِ نبی کی بس مجھے سوغات چاہیے

 

محبوبِ کبریا کے جو شایان شان ہو

اے فکرِ نارسا مجھے وہ نعت چاہیے

 

کرتے ہیں دفن اس لیے مومن کی قبر کو

اس کو وہاں نبی کی ملاقات چاہیے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ