اردوئے معلیٰ

 

فکر میں شان نبوت دیکھتا ہوں آپ کی

دلنشیں سیرت میں صورت دیکھتا ہوں آپ کی

 

آپ کے چہرے پہ روشن نور ہے توحید کا

اور آنکھوں میں رسالت دیکھتا ہوں آپ کی

 

کون دیکھے آپ کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر

سر خمیدہ ساری اُمت دیکھتا ہوں آپ کی

 

انگلیوں میں آپ کی شق القمر کا معجزہ

شمس لوٹا نے کی ندرت دیکھتا ہوں آپ کی

 

آپ نے رنگ و زباں کی سب فصلیں توڑ دیں

دین کی باہوں میں قوت دیکھتا ہوں آپ کی

 

رشک کرتا ہوں میں اپنی عظمت تقدیر پر

خود پہ جب نظر عنایت دیکھتا ہوں آپ کی

 

بر ملا کہتا ہے گل بخشالویؔ میرے نبی

بے گماں شانِ رسالت دیکھتا ہوں آپ کی

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات