اردوئے معلیٰ

محمد مظہر شان خدا ہیں

محمد مظہر شان خدا ہیں

محمد بندہ یزداں نما ہیں

 

محمد رحمتوں کی وہ گھٹا ہیں

کہ جس کی ذیل میں ارض و سما ہیں

 

محمد ہیں مدارِ حسن و خوبی

محمد صدرِ بزمِ ا نبیائ ہیں

 

محمد عظمتوں کی آخری حد

محمد خوبیوں کی انتہائ ہیں

 

وہی ہیں بے سہاروں کا سہارا

وہی بے آسروں کا آسرا ہیں

 

وہکتا ہے انہی سے شعلہ گل

وہی تحریک دامان صبا ہیں

 

نصاب دلبری ان پر تصدق

وہ اتنے دل ربا شیریں ادا ہیں

 

تو پھر اعمال پر تکیہ ہے کیسا

اگر وہ شافع روز جزا ہیں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ