محمدؐ مظہر شان خدا ہیں

محمدؐ مظہر شان خدا ہیں

محمدؐ بندہ یزداں نما ہیں

 

محمدؐ رحمتوں کی وہ گھٹا ہیں

کہ جس کی ذیل میں ارض و سما ہیں

 

محمدؐ ہیں مدارِ حسن و خوبی

محمدؐ صدرِ بزمِ ا نبیائ ہیں

 

محمدؐ عظمتوں کی آخری حد

محمدؐ خوبیوں کی انتہائ ہیں

 

وہی ہیں بے سہاروں کا سہارا

وہی بے آسروں کا آسرا ہیں

 

وہکتا ہے انہی سے شعلہ گل

وہی تحریک دامان صبا ہیں

 

نصاب دلبری ان پر تصدق

وہ اتنے دل ربا شیریں ادا ہیں

 

تو پھر اعمال پر تکیہ ہے کیسا

اگر وہ شافع روز جزا ہیں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

چمنِ طیبہ میں سنبل جو سنوارے گیسو
وہ سرور کشور رسالت جو عرش پر جلوہ گر ہوئے تھے
وہ نبیوں میں رحمت لقب پانے والا
دل میں اترتے حرف سے مجھ کو ملا پتا ترا
تیرا مجرم آج حاضر ہو گیا دربار میں
میں کبھی نثر کبھی نظم کی صورت لکھوں
نہ زہد و اتقا پر ہے نہ اعمالِ حسیں پر ہے
ہر درد کی دوا ہے صلَ علیٰ محمد
مرحبا سید مکی مدنی العربی
رسولِ پاک کی سیرت سے روشنی پا کر