اردوئے معلیٰ

Search

مرے سینے میں ہلچل سی مچی ہے

مرے آقا کی آمد کی گھڑی ہے

 

مری آنکھیں بچھی ہیں اُن کے در پر

دل و جاں میں عجب سی بے کلی ہے

 

قدم رکھتے ہیں میرے دل میں آقا

مرا دل بھی مدینہ کی گلی ہے

 

مری سرکار کے نقشِ قدم سے

مرے تاریک دل میں روشنی ہے

 

درِ اقدس پہ ہوں میں سر خمیدہ

مرے پہلو میں میری ماں کھڑی ہے

 

نبی کے دوست صدیقؓ و عمرؓ بھی

ہے عثمانِ غنیؓ، مولا علیؓ ہے

 

ظفرؔ! دل میں مرے عشقِ نبی کی

خُدا کے فضل سے شمع جلی ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ