اردوئے معلیٰ

مہرباں بندوں پہ اپنے ربِّ ذوالاکرام ہے

بعثتِ شاہِ عرب اس کا بڑا انعام ہے

 

رحمتِ عالم ہے وہ اس کی عنایت عام ہے

جو بھی دامن تھام لے اس کا وہ خوش انجام ہے

 

عرشِ اعظم جو مقامِ خالقِ علّام ہے

ایک شب پہنچا وہاں بھی ہادی اسلام ہے

 

روز و شب دل ہے پریشاں کب اسے آرام ہے

فکرِ امّت ہے اسے فکرِ اولو الارحام ہے

 

مصطفیٰ صلّ علیٰ ہیں آخری پیغام بر

جو کتاب اتری خدا کا آخری پیغام ہے

 

مژدہ باد اے بادہ نوشانِ حقیقت مژدہ باد

بادۂ کوثر بھی مِلکِ ساقی گلفام ہے

 

ہے گروہِ عاصیاں، محشر ہے اور ربِّ انام

مغفرت کے واسطے اُٹھنا اسی کا کام ہے

 

دیں کی نسبت ہم تو بس یہ جانتے ہیں اے نظرؔ

جو کہا جو کر کے دکھلایا وہی اسلام ہے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات