چراغ طُور ہے اُن کی گلی میں

چراغ طُور ہے اُن کی گلی میں

خدا کا نُور ہے اُن کی گلی میں

یہاں کا رنگ، خوشبو جانفزا ہے

ظفرؔ مسرُور ہے اُن کی گلی میں

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ