اردوئے معلیٰ

کیسے لکھوں نعتِ مزین

ایک یہ دل اور لاکھوں الجھن

 

احمدِ مرسل زینتِ گلشن

عالمِ امکاں ان سے معنون

 

دمکے چہرہ جیسے کندن

زلفِ معطر رشکِ گلبن

 

آنکھیں دلکش مست ہے چتون

قامتِ زیبا سرو گلشن

 

مشک و عنبر ان کا پسینہ

حلّہِ جنت جسم کی اترن

 

مکہ ان کی جائے ولادت

شہرِ مدینہ ان کا مسکن

 

ان پہ اترا مصحفِ قرآن

کامل و اکمل لفظاً معناً

 

زورِ خطابت اللہ اللہ

پارہ کر دے قلبِ آہن

 

علم کا منبع پاک حدیثیں

معدنِ حکمت سینہ روشن

 

علم حقیقت ان کی بدولت

اور انہیں سے معجزۂ فن

 

ہادی برحق رہبرِ کامل

راہِ ہدایت ان سے روشن

 

اہلِ خرد سب تابع فرما

منکر ان کے عقل کے دشمن

 

ان کے مصاحب واصلِ جنت

ان کے دشمن آگ کا ایندھن

 

خالی ہاتھ نہ لوٹا در سے

جو بھی پہنچا اشک بہ دامن

 

فائز اوجِ عرشِ معلی

واقفِ کیفِ جلوۂ ایمن

 

سبحان اللہ سبحان اللہ

خاک نشیں اور عرش نشیمن

 

بخت نظرؔ کا اوج نہ پوچھی

ہاتھ لگا سرکار کا دامن

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات