اردوئے معلیٰ

Search

تخلیقِ دو عالَم کا سبب سیّدِ عالَم

تجھ سا نہ کوئی عالی نسب سیّدِ عالَم

 

انساں ہی نہیں صرف ‘ ترے نور کے آگے

جھکتے ہیں ملک بہر ادب سیّدِ عالَم

 

کرتے گئے انساں کو حقیقت سے شناسا

کھلتے گئے جب جب ترے لب سیّدِ عالَم

 

سائل کو نہ تھی جنبشِ لب کی کوئی حاجت

کی پوری کچھ اس طور طلب سیّدِ عالَم

 

ٹوٹے ہوئے کچھ لفظ ہیں بہتے ہوئے آنسو

توصیف کا مجھ کو نہیں ڈھب سیّدِ عالَم

 

اب چہرئہ انور سے ہٹا دیجیے پردہ

بندہ ہے ترا جان بلب سیّدِ عالَم

 

حسّانؓ کے ہمراہ میں چلے خلد کو ازہرؔ

یوں اس پہ عنایت ہو عجب سیّدِ عالَم

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ