سلسبیلِ نور میرے قلب تک پہنچی عزیزؔ

سلسبیلِ نور میرے قلب تک پہنچی عزیزؔ

احمدِ مختار ﷺ کی اُلفت کا یہ فیضان ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

حبیبِ کبریا بن کر شہِ ارض و سما آئے
سرِافلاک تھی سرکارؐ کی جب آمد آمد
یہ محبوبِ خداؐ کا آستاں ہے
یوں نہ بنایا قادرِ مطلق خالق نے ان کا سایہ
’’میرے ہر زخمِ جگر سے یہ نکلتی ہے صدا‘‘
’’یہ آسمان کے تارے، یہ نرگسِ شہلا‘‘
’’نہیں جچتی جنت بھی نظروں میں ان کی‘‘
لکھوں جو نعتِ پیمبر ﷺ تو کس طرح لکھوں
یارَبّ
دنیا کی تمنا ہے نہ جنت ہے نظر میں