اردوئے معلیٰ

Search

کب تلک منتظر ہم رہیں یا نبی

اپنا جلوہِ اطہر دکھا دیجئیے

 

ہم فقیروں کی یا احمد مجتبےٰ

پیاس قلب و نظر کی بجھا دیجئیے

 

ٓآپ زینت ازل کی ہیں خیرالورا

آپ رونق ابد کی ہیں صلے علیٰ

 

آپ خیر البشر وجہ کون و مکاں

پار بیڑا ہمارا لگا دیجئیے

 

عرش والے بھی تیرے ثنا خواں ہیں

اور ملائک تیرے در کے دربان ہیں

 

تیرے دربار عالی کی کیا شان ہے

اپنے قدموں میں ہم کو بلا لیجئیے

 

رنج و الم سے کردو ہم کو بری

خشک ہے دل کی کھیتی یہ کردو ہری

 

تشنگی بے کلی تیرگی یا نبی

رہگزاروں سے دل کی ہٹا دیجئیے

 

بے عمل ہم سراپا گنہگار ہیں

آہ و گِریہ سے ہم کو جِلا دیجئیے

 

سب سے اونچا ہے رتبوں میں رتبہ تیرا

چومتے ہیں ملائک بھی روضہ تیرا

 

چاہتیں دل میں ہیں،سر میں سودا تیرا

در پہ عشرت کو اپنے بلا لیجئیے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ