اردوئے معلیٰ

Search

بات بن جاتی ہے اپنی بھی تری بات کے ساتھ

دائرے ذات کے بُنتا ہوں تری نعت کے ساتھ

 

اذن کے سارے دریچوں سے ہَوا آتی ہے

خامۂ شوق بھی جھوم اُٹھتا ہے نغمات کے ساتھ

 

ایک امکان بھی رہتا ہے پسِ حرفِ نیاز

آپ آ جائیں کسی رات کے لمحات کے ساتھ

 

سلسلے حرف کے جُڑتے ہیں بکھر جاتے ہیں

اک تری نعت ہو قرآن کی آیات کے ساتھ

 

ہر زماں روشن و تاباں ہے حُسینی منظر

فتح تعبیر نہ ہو پائی کبھی مات کے ساتھ

 

وہ مرا پِیر، مری زیست کا عنوان بھی ہے

جی رہا ہوں مَیں کرم شاہ کے حسنات کے ساتھ

 

سانس بھی ساتھ ہی چلتی ہے تو چلتا ہے نظام

دھڑکنیں مدح سرا ہیں مری ساعات کے ساتھ

 

درِ ایجاب و عنایت ہے کُشادہ مقصودؔ

نعت مَیں بھیجتا رہتا ہوں مناجات کے ساتھ

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ