اردوئے معلیٰ

Search

دل بستگی نہ ہو تری مدحت لکھے بغیر

لکھوں تو پھر رہے نہ دل اپنا کھِلے بغیر

 

مومن نہ ہو تری مئے وحدت پیے بغیر

کامل نہ ہو کوئی تری چاہت کیے بغیر

 

ہلکا نہ دل ہو آپ سے دل کی کہے بغیر

بنتی نہیں ہے بات مدینہ گئے بغیر

 

حسن و جمالِ روئے مبارک جو دیکھ لیں

حور و ملک رہیں نہ تصدّق ہوئے بغیر

 

خلقِ عظیم آپ کا اس درجہ بے مثال

ماں عائشہؓ نہ کہہ سکیں قرآں کہے بغیر

 

وہ ہادی و معلّم و مستجمعِ علوم

دنیا کی درسگاہوں میں لکھّے پڑھے بغیر

 

یہ بھی عظیم پہلوئے خلقِ عظیم ہے

احساں کیے ہزار اک احساں دھرے بغیر

 

اللہ رے پاس عظمتِ آں ربِّ ذوالجلال

کُل زندگی گزار دی کھُل کرہنسے بغیر

 

جاتی وہیں سے ہو کے ہے خُلدِ بریں کی راہ

پہنچے نہ کوئی بھی درِ دولت ملے بغیر

 

طائف کے ظالموں کا پڑھوں جب بھی ظلم و جور

رہتے نہیں ہیں آنکھ سے آنسو گرے بغیر

 

مرغوب اسے یہ رنگ ہے چارہ نہیں کوئی

دینِ متیں کے رنگ میں خود کو رنگے بغیر

 

ذرّے جو پائے ناز سے ان کے لپٹ رہے

کب رہ سکے وہ نازشِ دوراں بنے بغیر

 

اس بارگاہِ قدس میں جاتے ہیں خوش نصیب

آتے نہیں ہیں لوٹ کے جھولی بھرے بغیر

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ