اردوئے معلیٰ

Search

 

مخدومِ بندگاں ہو خدا کے حبیب ہو

خوش خلق ہو جمیل ہو روشن نصیب ہو

 

مرتاض و پارسا ہو تم عبدِ منیب ہو

سرتاجِ انبیاء ہو خدا سے قریب ہو

 

دنیائے بے ادب کے لئے تم ادیب ہو

وحدانیت کی شمع، عمل کے نقیب ہو

 

تاخیر سے ہو کوئی، کوئی عنقریب ہو

جب تم دعا کرو تو خدا مستجیب ہو

 

تلمیذِ رب ہو اور معلم قرآن کے

دانا ہو، نکتہ سنج ہو مردِ لبیب ہو

 

روحانیت کے روگ ہوئے سب شفا پذیر

نباضِ بے نظیر ہو ماہر طبیب ہو

 

لسانِ عصر زورِ خطابت پہ دنگ ہیں

وہ افصح اللسان وہ عالی خطیب ہو

 

ملنا شگفتہ روئی سے ہر آدمی کے ساتھ

چاہے کوئی امیر ہو چاہے غریب ہو

 

صلِ علیٰ کا ورد جو رکھتا ہے روز و شب

کیوں اس پہ مہرباں نہ خدائے مجیب ہو

 

رگ رگ میں مثلِ خوں ہے محبت رچی ہوئی

ظاہر کو ہم سے دور ہو سِراً قریب ہو

 

نقشِ قدم پہ ان کے جو چلتے رہے نظرؔ

امید ہے کہ ان کی شفاعت نصیب ہو

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ