اردوئے معلیٰ

آمدِ مصطفیٰ مرحبا مرحبا

آئے نور الہدٰی مرحبا مرحبا

 

ظلمتیں چھٹ گئیں ہو گئی روشنی

ہر طرف چھا گئی آگہی آگہی

 

صحنِ گلشن میں ہر ایک سُو چل پڑی

ایک تازہ ہوا مرحبا مرحبا

 

آپ کے دم سے دنیا میں ہیں رحمتیں

آپ ہی کے سبب ہیں سبھی برکتیں

 

دلفریب و حسیں رنگ کی ساعتیں

کیا ملا راہنما مرحبا مرحبا

 

آپ خیرالبشر رحمت العالمیں

حسنِ اخلاق تھا آفریں آفریں

 

ہر طرف سے صدائیں یہ آنے لگیں

سیرتِ مجتبیٰ مرحبا مرحبا

 

صاف کہتا ہے یہ خالق ِ دو جہاں

آپ ہی کے لئے ہیں زمیں آسماں

 

ورنہ دنیا کی مجھ کو طلب تھی کہاں

احمدِ مجتبٰی مرحبا مرحبا

 

جائیں گے ہم بھی زاھد کبھی نہ کبھی

رحمتیں ہیں برستی جہاں ہر گھڑی

 

وہ مدینے کی روشن سُہانی گلی

شہرِ خیرالوری مرحبا مرحبا

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات