اردوئے معلیٰ

Search

اُن پہ اللہ کرم کرتے ہیں

رات کو آنکھ جو نم کرتے ہیں

 

دل کی تختی پہ مقدس کعبہ

اپنی آنکھوں سے رقم کرتے ہیں

 

کیسے دیکھیں کے وہ چہرہ ہم بھی

میرے اللہ !یہ غم کرتے ہیں

 

زیر کرتے ہیں سدا دشمن کو

ہم تو اُونچا ہی علم کرتے ہیں

 

اپنے ہر زخم پہ مرہم کے لیے

اپنے قرآن کا دم کرتے ہیں

 

گلؔ عبادت کا ہے دعویٰ جن کو

جو بھی کرتے ہیں وہ کم کرتے ہیں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ