اردوئے معلیٰ

بے ذوقِ خود آگہی طلب بے کار است

رمزیست کہ فاش بر اُولی الابصار است

آں نورِ ازل کہ گم شدہ از کفِ تو

دریاب بہ دل کہ دل حریمِ یار است

 

خود آگہی کے ذوق کے بغیر تیری طلب

تیری تلاش بیکار ہے، اور یہ ایک ایسی

رمز ہے کہ جو صاحبانِ بصیرت پر آشکار ہے

وہ نورِ ازل کہ جو تیرے ہاتھوں سے گم ہو

گیا ہے اُسے اپنے دل میں پا لے کہ دل

ہی یار کا ٹھکانہ ہے، دل ہی حریمِ یار ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات