اردوئے معلیٰ

Search

تری ذات سب سے عظیم ہے تری شان جل جلالہٗ

تو ہر اک سے بڑھ کے کریم ہے تری شان جل جلالہٗ

 

تو قدیر ہے تو بصیر ہے ، تو نصیر ہے تو کبیر ہے

تو خبیر ہے تو علیم ہے تری شان جل جلالہٗ

 

تو غفور بھی تو شکور بھی ، تو ہی نور بھی تو صبور بھی

تو حفیظ ہے تو حلیم ہے تری شان جل جلالہٗ

 

تو مقیت بھی تو فرید بھی ، تو ممیت بھی تو وحید بھی

نہیں کوئی تیرا سہیم ہے تری شان جل جلالہٗ

 

تو حسیب ہے تو رقیب ہے ، تو مجیب ہے تو حبیب ہے

تو روف بھی تو رحیم ہے تری شان جل جلالہٗ

 

تو شہید بھی تو رشید بھی ، تو مجید بھی تو مُعید بھی

تو حمید ہے تو حکیم ہے تری شان جل جلالہٗ

 

تو ہے منتقم تو وکیل بھی ، تو ہے مقتدر تو کفیل بھی

تو ہی نعمتوں کا قسیم ہے تری شان جل جلالہٗ

 

ترے دم سے باغ و بہار ہے ، کہ تجھی سے ہر سو نکھار ہے

تو گلوں میں وجہِ شمیم ہے تری شان جل جلالہٗ

 

مِلا حمد و نعت کا شوق جو ، یہ مُشاہدِؔ خطا کار کو

یہ ترا ہی فضلِ عمیم ہے تری شان جل جلالہٗ

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ