اردوئے معلیٰ

تو اداس کر یا اداس رہ، مرے پاس رہ

مری آرزو، مری جستجو، مجھے راس رہ

 

مجھے توڑ تاڑ کے پھینک دے کسی شاخ سے

تو بکھیر شوق سے کوبکو ، مجھے راس رہ

 

مری آگہی کا قصور ہے، کوئی دور ہے

مری بے خبر! مری آبرو! مجھے راس رہ

 

مرا حرف حرف طلسم ہے یہ بجا مگر

مری ناشنیدہ سی گفتگو، مجھے راس رہ

 

مجھے زینؔ، خواب سا لگ رہی ہے وصال رت

غم بے خودی یونہی ہو بہو مجھے راس رہ

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات