اردوئے معلیٰ

Search

ثنا کے بابِ ناز پر تھے حرف جُو قلم دوات

کرم ہُؤا تو ہو گئے سخن نمُو قلم دوات

 

طلَب کی اوٹ میں کھلے ہُوئے ہیں نَو بہ نَو چمن

خیالِ مدحِ شاہ سے ہیں مُشکبُو قلم دوات

 

ابھی تو دیر ہے فصیلِ ضَو پہ تابِ اسم کی

ستارہ ساز ہیں ابھی سے چار سُو قلم دوات

 

ثنا رقم ہیں صرف یہ درِ شہِ انام کے

نیاز خُو نہیں کسی کے رُوبرو قلم دوات

 

بجا کہ لکھ نہیں سکیں گے لائقِ ثنا سخن

ازل سے تا ابد ہیں محوِ جستجو قلم دوات

 

سپردِ نعت کر دیے گئے ہیں لطفِ شاہ سے

کریں تو اور کیا کریں اب آرزو قلم دوات

 

لکھیں گے آج یاد کے ورَق پہ کوئی مدحِ نَؤ

کریں گے میرے زخمِ ہجر کو رفُو قلم دوات

 

ضیائے ماہِ نعت کے نزول کا یہ وقت ہے

بصد نیاز ہیں یہ میرے باوضو قلم دوات

 

تری عطا رہے گی میرے خام و عام لفظ پر

تری ثنا کریں گے میرے عجز خُو قلم دوات

 

رہینِ یاس تھے یہ دستِ فکرِ بے نمود میں

بہ فیض نعت ہو گئے ہیں سر خرو قلم دوات

 

مَیں چُوم لوں گا تیرے اسم کے جلو کی تابشیں

کریں گے مجھ سے جب بھی تیری گفتگو قلم دوات

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ