اردوئے معلیٰ

جبیں میری ہے اُن کا آستاں ہے

جبیں میری ہے اُن کا آستاں ہے

سرُور و کیف و مستی کا سماں ہے

ہویدا آج ہرسّرِ نہاں ہے

ظفرؔ ہر رازِ سربستہ عیاں ہے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ