اردوئے معلیٰ

Search

جیسے ہیں سرکار کوئی اور نہیں

محبوبِ غفار کوئی اور نہیں

 

جتنی پیاری میرے نبی کی ہیں باتیں

دنیا میں تذکار کوئی اور نہیں

 

آقا سے جبریلِ امیں یہ کہتے ہیں

تم جیسا سرکار کوئی اور نہیں

 

بہرِ سلامی آتے ہیں دن رات ملک

طیبہ سا دربار کوئی اور نہیں

 

دنیا میں مجھ ایسے غم کے ماروں کا

جُز اُن کے غمخوار کوئی اور نہیں

 

آپ کے جیسا کوئی نہیں ہے چارہ گر

مجھ جیسا لاچار کوئی اور نہیں

 

مشک سے برتر اُن کے پسینے کی خوشبو

اُس جیسی مہکار کوئی اور نہیں

 

مرزا جو حسان کہتے تھے نعتیں

اُن جیسے اشعار کوئی اور نہیں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ