اردو معلی copy
(ہمارا نصب العین ، ادب اثاثہ کا تحفظ)

حمد و ثنائے ربّ تعالیٰ سدا کروں

 

حمد و ثنائے ربّ تعالیٰ سدا کروں

یعنی خدا کا ذکر ہمیشہ کیا کروں

 

شانِ خدائے پاک کروں تا ابد بیاں

وقتِ اجل بھی اپنے خدا کی ثنا کروں

 

رکھوں جبیں کو نورِ عبادت سے تابناک

سجدہ حضورِ مالکِ ارض و سما کروں

 

دیتا ہے جب خدا مجھے مانگے بغیر ہی

پھر کیوں نہ اسکا شکر ہمیشہ ادا کروں

 

روزِ جزا ہو سایۂ عرشِ بریں عطا

رب کے حضور شام و سحر یہ دعا کروں

 

میں ہوں غلامِ احمدِ مختار اے خدا

دے اذن میں زیارتِ ام القرٰی کروں

 

مقصودِ لحن منظرؔ عاصی کا تو رہے

مدحِ حبیبِ کبریا بہرِ رضا کروں

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

نام بھی تیرا عقیدت سے لیے جاتا ہوں
جس دل میں نور عشق ہے ذات الہ کا
تجھی سے التجا ہے میرے اللہ
ہوتا ہے ترے نام سے آغاز مرا دن​
خدا کا خوف جس دل میں سمائے
خُدا کی یاد سے معمُور دل ہے
سمندر، کوہ و بن، ارض و سما ہیں
خداوندا کرم کا ابر برسا
خدا سایہ کُناں ہے بندگی میں
جہاں سارے بنائے ہیں خدا نے