اردوئے معلیٰ

Search

ربِّ جہاں سنوار دے زندگی اُخروی مری

تیرے ہی حکم پر چلوں ، اس میں ہے بہتری مری

 

تیرے ہی حکم سے خدا میں ہوں غلامِ مصطفی

تیرے نبی کی چاکری بن گئی سروَری مری

 

شہرِ نبی ہو گھر مرا ، گھر یہ عطا ہو اے خدا

مولا! کرم کی اِک نظر ختم ہو بے گھری مری

 

حسنِ عمل کو کیجیے ، رب کی رضا کے واسطے

لب پہ کبھی نہ لایے ، کہتی یہ خامشی مری

 

لمحہ بہ لمحہ دم بہ دم شکرِ خدائے دو جہاں

وقفِ ثنائے رب ہوئی بخت سے شاعری مری

 

پستی تکبّرات میں رقصاں ہے بے گماں مگر

لے کر فرازِ عرش پر پہنچی ہے عاجزی مری

 

کبر و تکلّفات کا بخت فقط زوال ہے

کہتی ہے بار بار اب مجھ سے یہ سادگی مری

 

بزمِ جہانِ حمد کا خادمِ مستقل ہوں میں

رب کے کرم سے خوشنما ہو گئی زندگی مری

 

حسنِ درود سے ہُوا طاہرِؔ خستہ ضو فشاں

پورا یقین ہے مجھے پکّی ہے چاکری مری

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ