اردوئے معلیٰ

Search

زمیں کیا آسماں پر گفتگو ہے

مرے آقا کی ہر جا جستجو ہے

 

اُنہی سے نور ہے کون و مکاں میں

اُنہی سے گلشنوں میں رنگ و بو ہے

 

مدینے کے گلی ، کوچوں میں اب بھی

مرے آقا کی خوشبو چار سو ہے

 

نبی کی نعت لکھنا اور پڑھنا

مری پہچان ، میری آبرو ہے

 

مجھے طیبہ بلا لیجے کہ دل میں

کئی برسوں سے آقا آرزو ہے

 

رضاؔ جو پیار کرتا ہے نبی سے

وہی دنیا و دیں میں سرخرو ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ