سوالی

علم کے شہر ہوں در پر حاضر

آرزو سب سے جدا لایا ہوں

بھیک تاثیر کی مجھ کو مل جائے

کاسۂ حرف و نوا لایا ہوں

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ